Get Adobe Flash player

April 2017

30 April 2017

بچوں کو بہتر ماحول دینا ہم سب کی اجتماعی ذمہ داری ہے

نیشنل کونسل آف سوشل ویلفیئر،حکومت پاکستان کے زیر اہتمام عوامی آگاہی پروگرام کے سلسلہ میں ڈاکٹر طارق فضل چوہدری ،وزیر مملکت ،کیڈ کی خصوصی ہدایت پر ایک ورکشاپ ''اسلام آباد میں بچوں کی ابتدائی نگہداشت اور تربیت کا سماجی نقطہ نظر ،مسائل اور اُن کے ممکنہ حل '' کے موضوع پر منعقدکی گئی ۔ ڈاکٹر ندیم شفیق ملک چیئرمین نیشنل کونسل آف سوشل ویلفیئرنے ورکشاپ کی صدارت کی جبکہ محترمہ شاستہ بانو گیلانی مہمان خصوصی تھیں۔ ورکشاپ میں سول سوسائٹی ،رضا کار اداروں کے نمائندوں اور بچوں کے حقوق کے سرگرم کارکنوں نے شرکت کی ۔اس موقع پر اپنے صدارتی خطاب ڈاکٹر ندیم شفیق ملک چیئرمین نیشنل کونسل آف سوشل ویلفیئرنے کہا کہ پاکستان دنیا کے اُن ممالک میں شامل ہے جس کی آبادی کی بڑی تعداد بچوں پر مشتمل ہے ۔ بچوں کی ابتدائی نگہداشت کے لیئے بہتر ماحول اہم کردار ادا کرتا ہے بچوں کے لیئے بہتر ماحول دینا ہم سب کی اجتماعی ذمہ داری ہے۔ موجودہ حکومت بچوں کے حقوق کے لیے سنجیدہ ہے موجودہ حکومت بچوں کی بہتر نگہداشت کے لیئے سہولیات کی فراہمی کے لیئے بھر پور کوشش کر رہی ہے ۔حکومت نے بچوں کی بہتر تعلیم و صحت کے لیے بہت سے مثبت اقدامات کیے ہیں۔غربت کی وجہ سے کچھ بچوں کو اُن کے والدین اسکول بھیجنے کے بجائے محنت مزدوری کے لیئے بھیج دیتے ہیں ۔لاکھوں کی تعداد میں بچے بنیادی غذائی ضروریات سے بھی محروم ہیں۔ بچوں کی تربیت کے لیئے ابتدائی پانچ سال کا عرصہ بہت اہم ہوتا ہے ۔ہماری بدقسمتی ہے کہ والدین میں شعور کی کمی ہونے کی وجہ سے وہ بچوں کی بہتر نگہداشت پر توجہ نہیں دیتے جس سے اُن کے مستقبل پر بُرے اثرات مرتب ہوتے ہیں تعلیموں اداروں میں اچھا ماحول نہ ملنے کی وجہ سے بہت سے بچے اسکول چھوڑ دیتے ہیں ۔سول سوسائٹی پر یہ خصوصی ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ وہ اپنی سماجی ذمہ داری کو پوری کریں تا کہ بچوں کو ہر طرح کے استحصال سے بچایا جا سکے۔ریاست کے ساتھ ساتھ ہم سب کی یہ سماجی ذمہ داری ہے کہ بچوں کو بہتر ماحول دیں تا کہ وہ مستقبل کے بہتر شہری بن سکیں۔ دیگر مقررین جن میں نمایاں محترمہ زہرا خانم ہا شوفاونڈیشن ، محترمہ فضیلہ ، شرکت فاونڈیشن ، محترمہ عمرانہ جلیل عورت فاونڈیشن ، محترمہ رفعت شجاع بیداری، محترمہ سلمیٰ حفیظ شرکت فاونڈیشن ، محترمہ قدسیہ محبوب نما ئندہ اسپارک، سید اشتیاق گیلانی چیف ایگزیگٹیو آفیسر یو گڈ کے علاوہ بچوں کے حقوق کے لیے کام کرنے والے سر گرم کارکنان نے اپنے تفصیلی لیکچرز میں بتایا کہ پاکستان کا مستقبل بچوں کی بہتر نگہداشت سے جڑا ہے۔ ہمارے پالیسی میکرز پریہ خصوصی ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ مستقبل کے ترقیاتی لائحہ عمل میں بچوں کو خصوصی اہمیت دیں بچوں کے لیے کھیل کے خصوصی میدا ن بنائے جائیں تا کہ بچوں کو صحت مند تفریح سرگرمیاں میسر ہو سکیں ۔ہمارے بچے بہت ذہین ہیں اُن کو بہتر مواقع دے کر اُن کی صلاحتیوںکو جلا بخشی جا سکتی ہے ۔بچوں کو مار نہیں پیار کی ضرورت ہوتی ہے کوئی بھی مہذب معاشرہ بچوں پر تشدد کی اجازت نہیں دے سکتا ۔

 

Read more

انتشار پھیلانے والوں کو مایوسی کے سوا کچھ نہ ملا،ریحانہ خان

پاکستان کے عوام کی خدمت کرنے والے جیت گئے۔ انتشار پھیلانے والوں کو مایوسی کے سوا کچھ نہ ملا۔ سپریم کورٹ کا فیصلہ حق و سچ ، پاکستان مسلم لیگ (ن) اور خاص طور پر پاکستان کے عوام کی فتح ہے۔ مسلم لیگ (ن) کو نشان عبرت بنانے والے خود نشان عبرت بن گئے۔ میاں محمد نوازشریف پاکستان کے پہلے وزیراعظم ہیں جو خود عدالت عظمیٰ میں پیش ہوئے اور عدالت کے ہر فیصلے کو قبول کیا۔ ان خیالات کا اظہار پاکستان کے مسلم لیگ (ن) یوتھ ونگ ضلع راولپنڈی کی سینئر رہنماریحانہ خان سیاسی و سماجی رہنما مسلم لیگ (ن)اڈیالہ سائیں برکت حسین نے اپنے ایک مشترقہ بیان میں کیا انہوں نے کہا کہ کہ عمران خان کو بھی اپنے وعدوں کی پاسداری کرتے ہوئے سپریم کورٹ کے فیصلے کو قبول کرنا چاہئے پاکستان کی عوام دھرنوں کی سیاست سے تنگ آ چکے ہیںکیونکہ ان دھرنوں کی وجہ سے ملکی معیشت کو پہلے بھی اربوں روپے کا نقصان ہو چکا ہے ویسے بھی سیاست منچلوں کا کھیل نہیں ۔ عمران خان سیاست ترک کرکے کرکٹ اکیڈمی بنا لیںعمران خان کی جماعت میں فصلی بٹیروں کا راج ہے جو مشکل وقت آنے پر اُڑان پکڑ جائیں گے عمران خان کو چاہئے کہ وہ دھرنوں کی سیاست کے بجائے کے پی کے کے عوام کی خدمت کریں اگر انہوں نے دھرنوں کے ذریعے ملک میں انتشار پھیلانے کی کوشش کی تو پاکستان کی عوام آئندہ الیکشن میں اس کا حساب لیں گیانہوںنے کہا کہ پاکستان کی عوام میاں برادران کے ساتھ ہیں پاکستان کے عوام ملک سے غربت ، بیروزگاری اور لوڈشیڈنگ سے نجات حاصل کرنے کے لئے میاں نوازشریف کو وزیراعظم دیکھنا چاہتے ہیں مسلم لیگ (ن) یوتھ ونگ ضلع راولپنڈی کی سینئر رہنماریحانہ خان نے کہا کہ یوتھ ونگ خواتین کل حق کی فتح پر اللہ تعالیٰ کا شکر ادا کرنے کے لیے خصوصی دعا اور محفل میلاد کرائے گی۔

 

 

Read more

پوٹھوہار ٹائون راولپنڈی میں تعمیراتی قوانین پر عمل درآ مدکرایا جائے

رفاہی تنظیم الاخوت کے صدر ثناء اللہ اخترنے کہا ہے کہ وزیر اعلی پنجاب محمد شہباز شریف پوٹھوہار ٹائون کے زیر انتظام علاقوں میں تعمیراتی قوانین پر عمل در آمد سے متعلق احکامات جا ری کریں جن کے بغیر بے ہنگم آبادیاں وجود میں آنے سے عوام کو شہری سہولیات کی فراہمی میں رکا و ٹوں کے علاوہ دیگر ان گنت مسائل کا سامنا ہے ــ انہوں نے یہ مطالبہ تنظیم کے ایک اجلاس میں کیا جس میں نثار چوہدری ، ابوعزیر، محمدطارق علی ، ظفر اقبال ، محمدعارف سعید بٹ ، کامران نذیر، راجہ مشتاق ، بلال بٹ اور ڈاکٹر نیادز اکمل نے شریک تھے ـ انہوں نے کہا کہ پوٹھو ہار ٹا ئون کو قائم ہوئے کئی سال ہو چکے ہیں مگر ا بھی تک تعمیراتی کاموں میں کوئی منصوبہ بندی یا نظم و ضبط نہیں اور اس بارے میں کھلی چھٹی دئے جانے کی وجہ سے راستوں اور گزر گاہوں کے تناز عات کے ساتھ صحت و صفائی کے مسائل بڑ ھ رہے ہیں نیزمقدمہ بازی اور شہروں کی طرف آبادی کی منتقلی میں بھی اضافہ ہو رہا ہے ـانہوں نے کہاکہ وزیر اعلی عوامی فلاح و بہبود کے مذکورہ امور کو اہمیت دیتے ہوئے انتظامیہ کو ہدایات جاری کریںـ

 

 

Read more

وقت کا تقاضہ ہے کہ ملک کی ترقی کیلئے کام کیا جائے،لبنیٰ ریحان

پاکستان مسلم لیگ (ن)کی رکن قومی اسمبلی لبنی ریحان نے سپریم کورٹ کے فیصلے کو حق اور سچ کی فتح قراردیتے ہوئے قوم کو مبارک دی ہے اور کہا ہے کہ وزیر اعظم پاکستان کے خلاف محاز قائم کرنے والوں کو فیصلے سے سخت زہنی صدمہ پہنچا ہے اور وہ اپنی سیاسی ساکھ بچانے کے حیلے بہانے ڈھونڈرہے ہیں۔ ایک بیان میں انہوں نے کہاکہ پانامہ کیس میں کمزوردلائل اور جھوٹے ثبوت پیش کرکے پی ٹی آئی نے اپنی سیاسی نااہلی کا ثبوت دیا ہے اور فیصلے ان کے امنگوںکے برعکس آنے پر اب پی ٹی آئی اور پیپلز پارٹی کے رہنما جھوٹی تاویلیں دے رہے ہیں۔ لنبی ریحان نے کہاکہ وقت کا تقاضہ ہے کہ ملک کو سیاسی اکھاڑہ بنانے کے بجائے قومی ترقی کے لئے کام کیا جائے اور پاکستان کومضبوط کرنے اور مستحکم کرنے کیلئے ہر ممکن تعاون کا مظاہر ہ کیا جائے۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان مسلم لیگ(ن)کی حکومت نے ملکی کی ترقی اور استحکام کے لئے جو کردار ادا کیا ہے اس سے کوئی انکار نہیں کر سکتا اورپاکستان کو جمہوری استحکام کی منزل سے ہمکنار کرنے کیلئے حکومت ہر محاز پر ڈٹ کر مقابلہ کرے گی۔

 

 

Read more

اوپن یونیورسٹی میں قومی ادیبوں کی دو روزہ کہکشاں اختتام پذیر

علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی میں قومی ادیبوں شعراء اور کالم نگاروں کی دو روزہ کہکشاں )کانفرنس(کے اختتامی تقریب میں مقررین نے اپنی سفارشات میں کہا کہ پاکستان کے تمام صوبوں کے لوگوں کے سماجی و ثقافتی تعلق کو بہتر اور مضبوط بنانے کے لئے زبانوں کی اجتماعیت کو فروغ دینے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ اوپن یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر شاہد صدیقی نے یونیورسٹی کو علمی ادبی و ثقافتی سرگرمیوں کا گہوارہ بنادیا ہے جو امن و آشتی ہم آہنگی اور یکجہتی کے لئے نہایت اہم ہے کیونکہ ان تقاریب میں ہر صوبے بلکہ پاکستان کے ہر خطے کے لوگ شرکت کرتے ہیں ان کو ایک دوسرے کی بات سنتے کا موقع ملتا ہے جن سے وہ ایک دوسرے کی حالات زبان ثقافت اور روایات سے باخبر رہتے ہیںاور ایک دوسرے سے باخبر رہنے کا واحد راستہ اس طرح کی قومی کانفرنسسز کاانعقاد ہے۔ کانفرنس میں قومی ادیب شعراء سکالرز کالم نگار اینکرز دانشور اور ماہرین تعلیم میں خورشید ندیم پروفیسر ڈاکٹر شاہد صدیقی پروفیسر فتخ محمد ملک سجاد میر منصور آفاقی حارث خلیق وجاہت مسعود ڈاکٹر یوسف خشک پروفیسر ڈاکٹر عبدالغفور میمن پروفیسر ڈاکٹر اباسین یوسف زئی ڈاکٹر علی خیل دریاب پروفیسر ڈاکٹر عبدالعزیز ساحر پروفیسر ڈاکٹر نصراﷲ وزیر پروفیسر ڈاکٹر نبیلہ رحمن ڈاکٹر عبدا لصبور ڈاکٹر یار محمد مغموم ڈاکٹر امان اﷲ میمن ڈاکٹر عبداﷲ جان عابد ضیاء لرحمن بلوچ اور ڈاکٹر حاکم علی برڑو شامل تھے۔ کانفرنس کا اہتمام شعبہ پاکستانی زبانیں نے کیا تھا ۔ پاکستان کی مختلف زبانوں میں امن و آشتی کے پیغام کی تحقیق کے لئے راستے ہوار کرنا اور پاکستان کی زبانوں میں موجود امن و آشتی کے پیغام کو فروغ دینا کانفرنس کے مقاصد تھے۔ ادب سماج اور اقدار پاکستانی زبانوں کا ادب اور انسان دوستی پاکستانی زبانوں کا ادب اور سماجی و معاشرتی اقدار ادب معاشرہ اور سماجی اقدار پاکستانی زبانوں کا ادب اور عصر حاضر اور معاشرے کی تعمیر میں ادب کا کردار کے موضوعات پر مقالے پیش کئے گئے۔ مقررین نے کہا کہ انسان کو تہذیب معاشرت اور رہن سہن سے آشنا رکھنا ادیبوں کا کام ہے اس لئے ادیبوں کے کام کا فروغ امن و آشتی کے لئے ضروری ہے۔ تقریب سے شعبہ پاکستانی زبانیں کے چئیرمین ڈاکٹر عبداﷲ جان عابد نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی ملک کی واحد یونیورسٹی نے جس میں پاکستان میں بولی جانے والی زبانوں کے فروغ اور تدریس کے لیے شعبہ پاکستانی زبانیں قائم ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی سبھی زبانیں علم و ادب کا ایک گنج گراں مایہ رکھتی ہے۔ ان زبانوں کا ادب انسانی جذبات و احساسات کا ترجمان ہونے کے ساتھ ساتھ امن یکجہتی بھائی چارے اور اعلیٰ انسانی اقدار کا امین بھی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ان زبانوں کے شعرا نے خیر کے فروغ اور مثبت اقدار کے احیا کے لیے ہر دور میں ادب تخلیق کیا ہے۔ ڈاکٹر عبداﷲ جان عابد نے کہا کہ امن و آشتی کے نغمے سبھی پاکستانی زبانوںمیں تواتر و تسلسل کے ساتھ گونجتے رہے ہیں اس لئے اس پیغام کو عام کرنا موجودہ وقت کی اہم ضرورت ہے۔

 

 

Read more

اسلام آباد ،جیب تراشی کی وارداتوں میں ملوث4ملزمان سمیت 10گرفتار

اسلام آ باد سی آئی اے پولیس کی کا رروائی ، جیب تر اش گر وہ کے چا ر ملزمان دو سہو لت کا رروں سمیت گرفتار، اسلام آباد پولیس نے جیب تر اشی کی وارداتو ں میں ملو ث چار ملزمان دو سہو لت کا روں،تین منشیا ت فروشوں سمیت 10 ملزمان کو گرفتار کر کے ان کے قبضہ سے 1880گر ام چرس، نقدی ،اسلحہ معہ ایمو نیشن بر آمد کرکے ملزمان کے خلا ف مقدما ت درج کر لیے مزید تفتیش جا ری ہے، جیب تراش گر وہ میٹر و بسوں ، مختلف اڈہ جا ت اور رش و الی جگہو ں پر وارداتیں کر تے تھے ، قبل ازیں ملزمان لا ہو ر اور شیخو پورہ اور دیگر علا قوں میں مقد ما ت میں چالا ن ہو چکے ہیں ۔ تفصیلا ت کے مطا بق ایس ایس پی آ پر یشنز اسلام آ باد ساجد کیا نی نے جر ائم پیشہ عنا صرکی گرفتار ی کے لیے تما م پولیس افسران کو ہد ا یا ت جا ری کر تے ہو ئے کہا کہ ایسے افراد کے خلاف مو ثر کا رروائی عمل میں لا ئی جا ئے ان ہد ا یا ت کی روشنی میں ڈی ایس پی ، سی آئی اے بشیر احمد نو ن کی زیر نگر انی طا ر ق رئوف سب انسپکٹر، ذوالفقاراے اٰٰیس آئی ، سکندر علی ہیڈ کنسٹیبل ، غلا م مصطفی اور شیر خا ن پر مشتمل پولیس ٹیم نے جیب تر اشی میں ملو ث چار ملزمان طا ہر محمود ولد عبد الغفور سکنہ رحمان پو رہ ضلع شیخو پو رہ، وحید حسین ولد یعقوب سکنہ فضل الہی پا ر ک با غبا نپو ر لا ہور، اما نت مسیح ولد نشا ن مسیح سکنہ نو شہر ہ ورکا ں ضلع گوجر انو لہ حا ل ڈہو ک چراغ دین راولپنڈی ، اور ڈرائیو ر محمد نصر ت ولد زرداد خا ن سکنہ گلستا ن کا لو نی راولپنڈی کو گرفتارکر لیا اور ملزمان کے قبضہ سے 32ہزار پا نچ سو روپے کی مسروقہ نقدی بر آمدکرلی گئی جو انہو ں نے مدعی مقدمہ زاہد محمود کی جیب سے دوران سفر نکا لی تھی ، ملزمان کے زیر استعما ل گا ڑ ی کو قبضہ پولیس میں لے لیا گیا ، پولیس کی دریا فت پر معلوم ہو ا کہ جیب تر اش وحیداور طا ہر کو سہو لت کا ر امانت مسیح اور ڈرائیور محمد نصر ت اپنی گا ڑ ی پر شہر کے مختلف اڈہ جا ت ، رش والی جگہو ں اور میٹرو بسوں پر چھو ڑتے اور بعدا زاں شہر یو ں سے لو ٹی ہو ئی رقم کا حصہ وصول کر تے اور انہیں ہر قسم کی سہو لت فراہم کر تے ،قبل ازیں ملزمان لا ہو ر اور شیخو پورہ اور دیگر علا قوں میں مقد ما ت میں چالا ن ہو چکے ہیں ۔ علا وہ ازیںتھا نہ تر نو ل پولیس کے محمد اقبال سب انسپکٹر نے دوران گشت ملزم عثمان خا ن کو گرفتار کرکے اس سے1100گر ام چر س بر آمد کرلی۔ تھا نہ سہا لہ پولیس کے انیس اکبر سب انسپکٹر نے ملزم طا ر ق خا ن کو گرفتار کرکے اس سے 550گر ام چرس بر آمد کرلی۔تھا نہ لو ہی بھیر پولیس کے سلطا ن احمد سب انسپکٹر نے دوران گشت ملزم محمد یو نس سے 230گر ام چرس بر آمد کرلی، تھا نہ نو ن پولیس کے عمر حیا ت سب انسپکٹر معہ ٹیم نے ڈکیتی کی واردات میں ملزم امداد علی کو گرفتار کرکے اس سے پسٹل 30بور معہ ایمو نیشن بر آمد کرلیا۔ تھا نہ کوہسار پولیس کے نو ازش علی اے ایس آئی نے ملزم جو زف چینڈ وان بو عیک نا ئیجریاکا رہا ئشی ہے متعلق داخلہ و رہا ئش پاکستا ن میں کو ئی ثبو ت پیش نہ کر سکا کو گرفتار کر لیا۔جبکہ سی آئی اے پولیس کے آ صف حسین سب انسپکٹر نے ڈکیتی کی واردات میں ملو ث گرفتار ملزم نور احمد کے انکشا ف و نشا ند ہی پر پسٹل 30بور معہ ایمو نیشن بر آمد کرلیا ، ملزمان کے خلاف علیحدہ علیحدہ مقدما ت درج رجسٹر کرکے مزید تفتیش شروع کر دی گئی ، ایس ایس پی اسلام آ با د ساجد کیا نی پولیس ٹیموں میں شامل افسران وملازمان کی اچھی کا رکردگی کوسراہتے ہو ئے تعریفی اسنا د نقد انعاما ت دینے کاا علان کیا ہے۔

 

 

Read more

لوڈ شیڈنگ اور پانی کی قلت ،جماعت اسلامی کے زیر اہتمام اسلام آباد میں احتجاجی مظاہرہ

جماعت اسلامی ضلع اسلام آباد کے زیر اہتمام اسلام آباد میںپانی کے شدید بحران اور بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ ، بجلی چوری اوراضافی چارجز کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا گیا جس میں سینکڑوں شہر یوں نے شر کت کی اور حکو مت اور سی ڈی اے کے خلا ف نعرے بازی کی ۔ احتجاجی مظاہرے سے جماعت اسلامی کے نائب امیر میاں محمد اسلم ، امیر جماعت اسلامی اسلام آباد زبیر فارو ق خان ، تاجر رہنماء محمد کاشف چو ہدری اور جماعت اسلامی اسلام آباد کے سیکرٹری جنرل امیر عثمان نے خطاب کیا ۔جماعت اسلامی کے رہنمائوں نے کہا اسلام آباد کے شہری حسب روایت موسم گر ما کے شروع ہو تے ہی پانی اور بجلی کی لوڈشیڈنگ کے دوہرے عذاب کا شکار ہو جا تے ہیںاور پانی کی بو ند بوند کو تر س رہے ہیں جبکہ حکو مت اور سی ڈی اے نے شہر یوں کو ٹینکراور بورنگ مافیا کے حو الے کر دیا ہے جو روزانہ کی بنیاد پر چالیس لاکھ روپے کا پانی خریدنے پر مجبور ہیں ،انھوں نے کہااسلام آباد میں پانی کی ضرورت ڈیرھ سو ملین گیلن ہے جبکہ شہر کو صرف تریپن ملین گیلن پانی فراہم کیا جا رہا ہے جبکہ سی ڈی اے کے پانچ بڑے شکایتی مراکز میں 36واٹر ٹینکرز مو جو د ہیں جن میں سے اکیس خراب حالت میں ہیں اور اسی طرح شہر بھر میں مو جو د 192ٹیوب ویلوں میں سے اکثر ٹیوب ویل خراب ہیں یا ان کی مو ٹریں جلی ہو ئی ہیں۔جماعت اسلامی کے رہنمائوں نے کہا وفاقی دارالحکو مت کو لاوارث حا لت میں چھوڑ دیا گیا ہے ہمارا مطالبہ ہے کہ اسلام آباد کو سملی ڈیم سے پانی کی مسلسل فراہمی کو یقینی بنایا جا ئے جبکہ پانی کی چوری اور لائینوں کو مر مت کر کے پانی کو ضا ئع ہو نے سے بچایا جا ئے ۔انھوں نے کہا اسلام آباد میں نصب تمام ٹیو ب ویلوں اور اس کی مو ٹریںکو ٹھیک کر کے چلایا جا ئے تا کہ شہر بھر میں پانی کا بحران ختم ہو سکے اور ٹیویب ویلوں کو بجلی کی لوڈ شیڈنگ سے مستثنیٰ قرار دیا جا ئے تا کہ شہریوں کو پانی کی فراہمی بلا تعطل جا ری رہ سکے ۔جماعت اسلامی کے رہنمائوں نے کہا حکمرانوں نے 2013 ء کے انتخابات میں توانائی بحران پر قابو پانے اور لوڈشیڈنگ ختم کرنے کے بلند و بانگ دعوے کیے تھے مگر چار سال گزرنے کے بعد بھی حکومت اپنے وعدوں کو پورا نہیں کر سکی اور پورے ملک کی طر ح اسلام آباد کے شہری بھی بدترین لوڈشیڈنگ کا شکار ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ بجلی کی چوری روکنے میں حکمران بے بس نظر آتے ہیں جس کی سب سے بڑی وجہ خود ان کی گود میں بیٹھے وہ بڑے بڑے بجلی چورہیں جنہیں کوئی پوچھ نہیں سکتا ۔ جماعت اسلامی کے رہنمائوں نے کہابجلی آئے نہ آئے بل ہر مہینے بڑی باقاعدگی سے آتے ہیں ۔ بجلی کے بل میں چھ قسم کے ٹیکس وصول کیے جا رہے ہیں جو ظلم ہے۔ عام آدمی بل اور ٹیکس دینے کے بعد پورا مہینہ پریشانی اور تنگ دستی میں گزارتا ہے، بجلی کی فی یونٹ قیمت دنیا بھر کے مقابلے میں سب سے زیادہ وصول کی جارہی ہے ، اگر غریب صارف کسی پریشانی کی وجہ سے ایک ماہ بل ادا نہ کرسکے تو اس کا میٹر کاٹ لیا جاتاہے اور امیر اور مل اونرز کروڑوں روپے ڈکار کر بیٹھ جائیں تو انہیں کوئی پوچھنے والا نہیں ہوتا ۔

 

 

Read more

پشاورمیں داعش کاحملہ، افغان طالبان رہنماء کی ہلاکت کا دعویٰ

افغان عسکریت پسندوں نیدعویٰ کیا ہے کہ افغان طالبان کے سینیئر رہنما کو دولت اسلامیہ (داعش) نے پشاور میں قتل کردیا ہے،غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق افغان طالبان ذرائع کا کہنا تھا کہ مولوی داؤد اور دیگر دو افراد کو پاکستان کے اندر مارا گیا جبکہ طالبان ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے مولوی داؤد کی ہلاکت کی تصدیق کی۔ داعش نے کسی کا نام لیے بغیر طالبان رہنما کو قتل کرنے کی ذمہ داری قبول کی تھی جبکہ پشاور میں گزشتہ تین ہفتوں کے دوران تین افغانیوں اور ایک پاکستانی مولودی پر کم ازکم چار حملے ہوئے جس کے نتیجے میں 6 افراد جان سے گئے ۔ادھرپولیس نے افغان شہری کے قتل کی تصدیق کی لیکن ان میں سے کسی کی شناخت مولوی داؤد کے نام سے نہیں ہوئی۔ سینیئر پولیس کا کہنا تھا کہ پولیس واقعے کی تفتیش کررہی ہے اور'حملے کی وجوہات تاحال واضح نہیں ہیں ۔اور ہم اس کی تفتیش کررہے ہیں۔پولیس کا کہنا تھا کہ حملہ آوروں کا نشانہ مقامی عالم دین مفتی ندیم تھے جو فائرنگ سے زخمی ہوگئے ۔

 

Read more

جرمنی میں پناہ گزینوں کے مراکز پر حملوں کاانتباہ

جرائم کی تحقیق کے وفاقی جرمن محکمے (بی کے اے) نے خبردار کیا ہے کہ دائیں بازو کے جرمن شدت پسند نوجوان ملک میں تارکین وطن کی رہائش گاہوں پر حملے کر سکتے ہیں۔میڈیارپورٹس کے مطابق جرمنی میں مہاجرین اور تارکین وطن کو مہیا کردہ رہائش گاہوں پر حملے کیے جا سکتے ہیں۔ جرمنی میں دائیں بازو کی سوچ رکھنے والے نوجوانوں میں انٹرنیٹ کے ذریعے شدت پسندانہ سوچ پیدا ہو رہی ہے۔اسی تناظر میں بی کے اے نے خبردار کیاکہ دائیں بازو کے ایسے نوجوان شدت پسند انفرادی طور پر تارکین وطن کی رہائش گاہوں پر حملے کرنے کے منصوبے بنا سکتے ہیں۔ملک کی سکیورٹی صورت حال پر نظر رکھنے والے اس ادارے نے اپنی رپورٹ میں یہ بھی لکھا کہ سکیورٹی حکام کے پاس ''ایسے حملوں کی تحقیقات کرنے اور ان کو روکنے کے لیے پیشگی اقدامات کرنے کے کوئی مؤثر طریقہ ہائے کار موجود نہیں ہیں۔بی کے اے کے مطابق دائیں بازو کے مشتبہ شدت پسند زیادہ تر نوجوان ہیں، جن کی عمریں اٹھارہ سے تیس برس کے درمیان ہیں۔ عام طور پر یہ لوگ مہاجرین کی رہائش گاہوں پر حملے ویک اینڈ پر رات کے اوقات میں کرتے ہیں۔جرائم کی تحقیق کرنے والے وفاقی جرمن ادارے کا یہ بھی کہنا ہے کہ حالیہ مہینوں کے دوران مہاجرین کی رہائش گاہوں پر حملوں میں کمی واقع ہوئی ہے لیکن ان نوجوانوں میں اجانب دشمنی، نسل پرستی اور مہاجرین مخالف جذبات میں مسلسل اضافہ دیکھا جا رہا ہے۔ادارے نے خبردار کیا کہ رواں برس ملکی انتخابات سے قبل ان لوگوں کی جانب سے مہاجرین کے خلاف جرائم کرنے میں ممکنہ طور پر اضافہ ہو سکتا ہے۔

 

 

Read more

شام کے شہر حماء میں فضائی حملے کے نتیجے میں آٹھ امدادی کارکن ہلاک

شام کے شمالی شہر حما میں ایک فضائی حملے میں 'شہری دفاع' کے آٹھ رضاکار جاں بحق ہوگئے۔غیرملکی خبر رساں اداروں کی رپورٹس کے مطابق 'وائیٹ ہیلمٹ' کے نام سے مشہور امدادی کارکنان کے حمامیں قائم ایک مرکز پر فضائی حملہ کیا گیا۔ یہ معلوم نہیں ہوسکا کہ آیا فضائی حملہ کس ملک کی طرف سے کیا گیا تھا۔شام میں انسانی حقوق کی صورت حال پر نظر رکھنے والے ادارے'آبزرویٹری' کے مطابق شہری دفاع کے کارکنان کا مرکز حما کے شمالی قصبے کفر زیتا میں واقع ہے۔ اس مرکز پر بموں اور میزائلوں سے حملہ کیا گیا۔خیال رہے کہ شام میں اپوزیشن کے زیرکنٹرول علاقوں پر بمباری اور نہتیشہریوں کے قتل عام میں اسد رجیم اور اس کے حلیف روس کا ہاتھ بتایا جاتا ہے۔ شامی فوج کے جنگی طیارے اپوزیشن کے زیرانتظام علاقوں میں وقفے سے وقفے سے بمباری کرتے رہتے ہیں۔ شامی فوج نے گذشتہ ماہ شمالی حما? کے علاقوں پر قبضہ کیا تھا۔ شہر کے بعض علاقے اب بھی باغیوں کے زیر انتظام ہیں۔

 

 

Read more